‘ارطغرل’ اور ‘حلیمہ سلطان’ کی آواز کے پیچھے کون ہے؟

ایک روپے کلو ٹماٹر، کاشت کاروں نے سیکڑوں ٹن سڑک پر پھینک دیے
May 22, 2020
کرونا کی منٹوں میں تشخیص، متحدہ عرب امارات بازی لے گیا
May 22, 2020

‘ارطغرل’ اور ‘حلیمہ سلطان’ کی آواز کے پیچھے کون ہے؟

مقبول ترین ترک ڈرامہ سیریل ‘ارطغرل غازی’ پاکستان میں بے حد پسند کیا جا رہا ہے اور مداح ‘ارطغرل’ اور ‘حلیمہ سلطان’ کے کردار میں کافی دلچسپی بھی لے رہے ہیں۔

شہرہ آفاق ترک ڈرامے میں حلیمہ سلطان اور ارطغرل کا کردار پاکستان میں خوب مقبول ہورہا ہے اور مداح اس کے کردار اور پیچھے چھپی آوازوں کے بارے میں بھی تجسس رکھتے ہیں۔

 اس ضمن میں پاکستان ٹیلی ویژن نیٹ ورک (پی ٹی وی) کے چیف مارکیٹنگ اینڈ اسٹریٹیجی آفیسر نے برطانوی نشریاتی ادارے کو ایک انٹرویو کے دوران بتایا کہ ‘ارطغرل’، ‘حلیمہ سلطان’ اور ڈرامے کے دیگر کرداروں کی اُردو ڈبنگ کے لیے سرکاری ٹی وی نے ایک تفصیلی اور طویل فیصلے کے بعد نجی ڈبنگ ایجنسی کا انتخاب کیا۔

انہوں نے بتایا کہ صداکار یعنی وائس اوور آرٹسٹ کے انتخاب کی ذمہ داری نجی ڈبنگ ایجنسی کو دی گئی تھی جب کہ حتمی فیصلہ پی ٹی وی نے آرٹسٹوں کی صلاحیت کو دیکھ کر کیا کہ کون سا آرٹسٹ کس کردار کی اردو میں ڈبنگ کرے گا۔

پی ٹی وی کے چیف مارکیٹنگ اینڈ اسٹریٹیجی آفیسر نے بتایا کہ صداکار کی صلاحیت کو دیکھتے ہوئے ’ارطغرل غازی‘ کے مرکزی کردار ’ارطغرل‘ کو اردو ڈب ’احتصام الحق‘ جب کہ ’حلیمہ سلطان‘ کو اردو زبان میں ڈب کرنے کے لیے’کرن راجپوت‘ کو چنا گیا۔

انہوں نے بتایا کہ یہ تمام صداکار ’ارطغرل غازی‘ کے پانچویں سیزن تک اِسی طرح اردو ڈبنگ جاری رکھیں گے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ اسلامی تاریخ پر مبنی ترک ڈرامہ ‘ارطغرل غازی‘ کو اردو زبان میں ڈب کرنا وزیراعظم عمران خان کا خیال تھا، وہ چاہتے تھے کہ پاکستان کی نوجوان نسل یہ سیریز دیکھے تاکہ اسلامی اقدار اور تاریخ کے بارے میں ان کے علم میں مزید اضافہ ہوسکے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان میں ’ارطغرل غازی‘ کی مقبولیت دیکھنے کے بعد ہم ترکی کے سرکاری ٹی وی ’ٹی آر ٹی‘ کے ساتھ مزید کام کرنے کے منتظر ہیں۔